Showing posts with label T20. Show all posts
Showing posts with label T20. Show all posts

Saturday, September 12, 2015

Muhammad Hafeez Bowling action

Domestic Event

Domestic Event, Making criticism for Hafeez Bowling action

Domestic Event, Making criticism for Hafeez Bowling action
لاہور: قومی ٹی ٹوئنٹی ایونٹ میں بولنگ کو تنقید کا نشانہ بنانے پر حفیظ بلبلا اٹھے اور اس حوالے سے رپورٹ کو غیر ذمہ دارانہ قررا دے دیا۔
تفصیلات کے مطابق ایکشن غیر قانونی قرار دیے جانے پر محمد حفیظ ایک سال تک انٹرنیشنل کرکٹ میں بولنگ نہیں کرسکتے، البتہ انھیں قومی ٹی ٹوئنٹی میں بطور بولر بھی صلاحیتوں کے اظہار کا موقع دیدیا گیا ہے، ڈائریکٹر ڈومیسٹک کرکٹ انتخاب عالم کا کہنا تھا کہ عالمی سطح پر پابندی کے باوجود کسی بھی کرکٹر کو ملکی سطح کے مقابلوں میں شرکت کا موقع دینا بورڈ کی صوابدید ہے، اس سے ہمیں اندازہ ہوگا کہ ایکشن میں کس حد تک بہتری آئی ہے۔
امپائرز ان کی بولنگ کا جائزہ لے رہے اور رپورٹ بھی کرسکتے ہیں، ایک غیرملکی ویب سائٹ کے مطابق محمد حفیظ ایکشن کی اصلاح کیلیے کوئی کام ہی نہیں کر رہے تو دوبارہ جائزہ لینے کی ضرورت کیا تھی؟ قوانین کے تحت پابندی کا ایک سال پورا ہونے سے قبل آل رائونڈر آئی سی سی سے ریویو کی درخواست بھی نہیں کرسکتے۔
ایسے میں بولنگ کا موقع دینے کا کیا مقصد ہے؟ اس حوالے سے ردعمل کا اظہار کرنے کے لیے محمد حفیظ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ کا سہارا لیا،انھوں نے کہاکہ 9ماہ سے بولنگ ایکشن کی اصلاح کے لیے نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں کوچز اور اینالسٹ کے ساتھ کام کررہا ہوں، بہت جلد ایکشن میں نظر آئوں گا،انھوں نے ویب سائٹ کی خبر کو غیر ذمہ داری کی بہترین مثال قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ باتیں نجانے کہاں سے آئی ہیں۔

Domestic Event

Muhammad Hafeez

Tuesday, August 18, 2015

Pakistan Super League balloon was then fainted ..

Pakistan Super League

PSL balloon was then fainted

Pakistan Super League balloon was then fainted
کراچی / لاہور: پاکستان سپرلیگ کے غبارے سے پھر ہوا نکلنے لگی، وینیوز کی تلاش میں سرگرداں بورڈ تاریخ پر تاریخ دینے لگا، فروری اور اپریل کے بعد اب چیئرمین نے مئی میں ایونٹ سجانے کا عندیہ دے دیا،آئی پی ایل کے ساتھ صحرائی وینیوز پر سخت گرمی ٹاپ پلیئرز کی راہ میں رکاوٹ بن سکتی ہے۔
شہریار خان کا کہنا ہے کہ  ٹوئنٹی 20 ٹورنامنٹ قطر میں ہوسکتا ہے مگر یو اے ای کا آپشن بھی نظر انداز نہیں کیا جاسکتا، جلد ہی بورڈ کا وفد دونوں ممالک کا ایک اور دورہ کرے گا، آئندہ 10 روز میں شیڈول اور وینیوز کے بارے میں حتمی فیصلہ کر لیں گے۔
تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ انعقاد سے قبل ہی تنازعات کا شکار ہے، سب سے بڑا اعتراض ایونٹ کے ملک سے باہر انعقاد پر سامنے آیا جسے بورڈ خاطر میں لانے کو تیار ہی نہیں ہے،اس کی منصوبہ بندی کا یہ عالم ہے کہ ابھی تک اتنے بڑے ٹورنامنٹ کے لیے مناسب وینیو تک تلاش نہیں کیا جا سکا۔
دوسری جانب ایونٹ کے انعقاد کی ایک کے بعد دوسری تاریخ دینے کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔  پی سی بی نے پہلے فروری 2016میں انعقاد کا اعلان کیا، ایسے میں یہ حقائق سامنے آئے کہ اس وقت متحدہ عرب امارات کے تینوں سینٹرز سابق کرکٹرز کی ماسٹرز چیمپئنز لیگ کے میزبان ہونگے، فیوچر ٹور پروگرام کے تحت بھی اس عرصے میں صرف ملکی اور ویسٹ انڈین کھلاڑی ہی دستیاب ہوتے، یہ جاننے کے بعد شہریارخان نے اپریل میں انعقاد کی بات کر دی حالانکہ اس وقت آئی پی ایل کے میچز جاری ہونگے، جب میڈیا کے ذریعے ان کی توجہ اس جانب مبذول کرائی گئی تو اب بورڈ چیئرمین کی جانب سے ایونٹ مئی میں منعقد کرنے کا عندیہ دے دیا گیا ہے۔
نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں گورننگ بورڈ اجلاس میں ایگزیکٹیو کمیٹی سربراہ نجم سیٹھی نے ارکان کو پاکستان سپر لیگ کے حوالے سے پیش رفت سے آگاہ کیا، انھوں نے بتایا کہ ایونٹ کا ایکشن پلان اگلی میٹنگ میں پیش کردیا جائے گا۔ بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے شہریار خان نے بتایا کہ فروری میں متحدہ عرب امارات کے اسٹیڈیم ماسٹرز ٹوئنٹی 20 لیگ کیلیے بک ہونگے، لہذا پاکستان سپر لیگ کا انعقاد  قطر میں ہونے کے امکانات ہیں۔
انھوں نے واضح کیا کہ یو اے ای کو ابھی نظر انداز نہیں کیا جا سکتا، وہاں پر بھی ایونٹ کے انعقاد کا آپشن ہمارے سامنے موجود ہے، ٹورنامنٹ کی تاریخوں میں ممکنہ ردوبدل کے حوالے سے چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ ہمارے سامنے ایک تجویز یہ بھی موجود ہے کہ ایونٹ آئندہ سال فروری کے بجائے مئی میں کرا لیا جائے،اس کیلیے انٹرنیشنل کرکٹرز کی مصروفیات اور دستیابی کو بھی دیکھنا ہوگا۔
انھوں نے کہا کہ پی سی بی کا ایک وفد جلد ہی پی ایس ایل کے معاملات پر بات چیت کیلیے یو اے ای اور قطر جائے گا،آئندہ 10روز میں شیڈول اور وینیوز کے بارے میں حتمی فیصلہ کرلینگے۔ واضح رہے کہ پی ایس ایل کے مئی میں انعقاد سے بھی تاریخیں آئی پی ایل سے متصادم ہوں گی کیونکہ رواں برس بھی انڈین لیگ کا فائنل 24 مئی کو کھیلا گیا تھا۔
ورلڈ ٹوئنٹی20 کے مارچ اپریل میں بھارت میں ہی انعقاد کی وجہ سے آئی پی ایل مئی کے آخر تک جاری رہ سکتی ہے۔ اگر پی سی بی مئی کے آخر میں ایونٹ کرانے پر بضد بھی رہا تب چاہے مقابلے متحدہ عرب امارات میں ہوں یا پھر قطر میں شدید گرمی کا بہرحال سامنا کرنا پڑے گا، صحرائی وینیوز پر جھلسا دینے والی گرمی میں شاید ہی کوئی ٹاپ پلیئر کھیلنے کو تیار ہو۔

Pakistan Super League

Wednesday, August 12, 2015

USA on the ICC cricket players accused of not paying compensation ..

نیویارک: امریکی کرکٹ ایسوسی ایشن نے آئی سی سی پر پلیئرز کے معاوضے ادا نہ کرنے اور غلط بیانی سے کام لینے کا الزام عائد کردیا۔
امریکی کھلاڑی آئر لینڈ میں ورلڈ ٹوئنٹی 20 کوالیفائرز کھیل کر وطن واپس لوٹ چکے مگر انھیں آئی سی سی کی جانب سے فی کس 2 ہزار ڈالر دینے کا جو وعدہ کیا گیا تھا وہ پورا نہیں ہوا۔ امریکا کرکٹ ایسوسی ایشن کے نائب صدر اوین گرے کا کہنا ہے کہ آئی سی سی کو ہی ہمارے پلیئرز کو معاوضہ ادا کرنا تھا جو ابھی تک نہیں دیا گیا، کونسل کے آفیشلز کا کہنا ہے کہ انھوں نے یہ رقم ہماری ایسوسی ایشن کے اکاؤنٹ میں بھیج دی مگر یہ سفید جھوٹ ہے۔یاد رہے کہ آئی سی سی یو ایس اے کرکٹ ایسوسی ایشن کو مختلف بے ضابطگیوں پر معطل کرکے پلیئرز کا کنٹرول خود سنبھال چکی ہے۔

Super League, Pakistan once again looked to the UAE ..


کراچی: قطرمیں ناکافی سہولتوں کے سبب پاکستان ایک بار پھر سپر لیگ کیلیے یو اے ای کی جانب دیکھنے لگا، کسی ایک وینیو کو ماسٹرز لیگ کیلیے مختص نہ کرنے کی درخواست کا سوچا جا رہا ہے۔
تفصیلات کے مطابق پی سی بی آئندہ برس ٹوئنٹی 20 لیگ کرانے کیلیے دن رات ایک کیے ہوئے ہے مگر مشکلات ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہیں، اسے سابق کرکٹرز کی ماسٹرز لیگ کی وجہ سے متحدہ عرب امارات میں تین وینیوز حاصل کرنے میں دشواری کا سامنا ہے، اسی لیے قطر سے رابطہ کیا گیا مگر وہاں سہولتوں کی کمی ہے، بورڈ نے قطر کرکٹ ایسوسی ایشن کو خط لکھ کر میڈیا سینٹر کی تعمیر اور پویلینز کو کشادہ کرنے کا کہا مگر وہ اپنی جانب سے رقم خرچ کرنے کے موڈ میں دکھائی نہیں دیتا، کئی دیگر وجوہات کی بنا پر بھی پی سی بی حکام قطر میں ایونٹ کا انعقاد نہیں چاہتے، اسی لیے ایک بار پھر یو اے ای کرکٹ حکام سے رابطہ کر لیا گیا ہے، ان سے کہا گیا کہ لیگ کے لیے دبئی اسپورٹس سٹی ہی دے دیں۔
ماسٹرز لیگ کا انعقاد تو شارجہ اور ابوظبی میں بھی ہو سکتا ہے، پاکستان نے اس سلسلے میں اعلیٰ سطح پر بھی کوششیں شروع کر دی ہیں، اماراتی حکام نے مشورہ دیا ہے کہ پی سی بی ازخود ماسٹرز لیگ کے منتظمین سے درخواست کرے، مگر ذرائع نے بتایاکہ ماضی میں اس قسم کی کوششوں کا کوئی مثبت نتیجہ نہیں نکل سکا تھا،مالی خسارے کے خدشے کو مدنظر رکھتے ہوئے ماسٹرز ایونٹ کے منتظمین کوئی خطرہ مول نہیں لینا چاہتے، ان کے نزدیک دبئی اہم ترین وینیو ہے وہاں میچز نہ کرانا درست نہیں ہو گا۔ حالیہ اقدامات کے باوجود بھی اگر بات نہ بنی تو پاکستان کو مجبوراً ایونٹ کا انعقاد دوحا قطر میں ہی کرنا ہوگا۔

Monday, August 10, 2015

Umar Gul backs PCB to launch domestic league on the lines of IPL ..

Experienced pacer Umar Gul feels Pakistan needs to overhaul its domestic structure on the same lines as India in order to become a top ranking team in all formats and also enhance the financial condition of its players who don’t make the national team. Gul, 31, who has been struggling with a knee problem despite having undergone a knee surgery in 2013, believes that Indian cricket had improved because of its stable domestic system and the Indian Premier League.

Zim vs NZ,, 1 T-20 ..

            

Thursday, August 6, 2015

Younis Khan admitted the mistake of leaving the national team ..


نئی دہلی: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان یونس خان نے 2009 میں قومی ٹیم کی قیادت سے مستعفی ہونے کی غلطی کا اعتراف کرلیا۔
بھارتی میڈیا کو انٹرویو کے دوران یونس خان کاکہنا تھا کہ ہر شخص اپنی زندگی میں غلطی کرتا ہے اور میں نے بھی کئی غلطیاں کی ہیں لیکن ان میں سب سے بڑی غلطی 2009 میں قومی ٹیم کی قیادت چھوڑنے کی غلطی ہے لیکن ملک کی نمائندگی کرنے پر مجھے فخر ہے اور اگر قومی ٹیم کی قیادت کا ایک اور موقع دیا گیا تو اسے ضرور قبول کروں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ کچھ کھلاڑی تعاون نہیں کر رہے تھے اس لئے قومی کرکٹ ٹیم کی قیادت سے استعفیٰ دیا تاہم اس وقت کے چیئرمین پی سی بی اعجاز بٹ نے بہت سپورٹ کیا اور وہ کھلاڑیوں کے خلاف ایکشن لینے کے لئے بھی تیار تھے۔
ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ جیتنے کے فوری بعد شارٹ فارمیٹ سے ریٹائرمنٹ کے سوال پر یونس خان کا کہنا تھا کہ ان کا خیال ہے کہ ٹی ٹوئنٹی خالصتاً نوجوان کھلاڑیوں کا فارمیٹ ہے اور اب تک اس چیز پر قائم ہوں اور دیگر ٹیموں میں بھی دیکھا جاسکتا ہے کہ وہ نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دیتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ٹی ٹوئنٹی میں کنارہ کشی کی ایک وجہ آئی پی ایل میں ہونے والا ناروا سلوک بھی تھا، آئی پی ایل میں راجستھان رائلز کی جانب سے صرف ایک میچ کھلائے جانے پر خوش نہیں تھا، مجھے علم نہیں کہ ہمارے کپتان شین وارن کا مجھے نہ کھلانے کی کیا وجہ تھی، پہلے آئی پی ایل ایڈیشن میں ماحول کو دیکھتے ہوئے اسی وقت سوچ لیا تھا کہ میں اس ماحول میں خود کو ایڈجسٹ نہیں کرسکتا۔
یونس خان نے واضح کیا کہ انہوں نے ٹی ٹوئنٹی سے کنارہ کشی اختیار کرلی ہے تاہم اگر پی سی بی نے انہیں آئندہ سال ہونے والی پاکستان سپرلیگ کے لئے دعوت دی تو وہ اس کے لئے دستیاب ہوں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپنی زندگی میں کسی کو حقیر نہیں سمجھا اور ہمیشہ خود پر پہلے پاکستان کو ترجیح دی، کوئی کپتان یا کوچ یہ نہیں کہہ سکتا کہ یونس خان نے انہیں سپورٹ نہیں کیا تاہم میرا یقین ہے کہ ہر کھلاڑی چاہے اس نے 100 ٹیسٹ کھیلے ہوں یا صرف ایک ٹیسٹ ، اسے برابر کی عزت دینی چاہیئے۔

Sunday, August 2, 2015

Shahid Afridi Afridi to receive the highest award in his name was Record ..

دبئی: پاکستانی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں سب سے زیادہ ’’مین آف دی میچ ‘‘ کا ایوارڈ حاصل کرنے والے کھلاڑی بن گئے ہیں۔
پاکستانی ٹی ٹوئنٹی ٹیم کے کپتان شاہد  آفریدی اب تک 82 ٹی ٹوئنٹی میچز میں  9 بار ’’مین آف دی میچ‘‘ کا ایوارڈ حاصل کرنے والے پہلے کھلاڑی بن گئے۔بوم بوم آفریدی نے اپنی آل راؤنڈر کارکردگی کے باعث 1218 رنز بناکر 83 وکٹیں بھی حاصل کیں۔
ویسٹ انڈیز کے مایہ ناز کھلاڑی کرس گیل  45 میچز میں 1406 رنز بناکر 8 بار میچ کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز اپنے نام کرکے دوسرے نمبر پر ہیں جب کہ پاکستان کے آل راؤنڈر محمد حفیظ نے اب تک 64 میچوں میں 1382 رنز بنائے اور 8 بار’’مین آف دی میچ‘‘ کا ایوارڈ کرکے تیسرے نمبر ہیں۔
نیوزی لینڈ  کے کھلاڑی میک کولم اور بھارتی کھلاڑی یوراج سنگھ 7، 7 بار’’میچ کے بہترین کھلاڑی ‘‘ کا ایوارڈ حاصل کرکے بالترتیب چوتھی اور پانچویں پوزیشن پر ہیں۔

Monday, March 10, 2014

Pakistan Team Squaad ICC World Twenty20 2013/14

Here is the detail of Pakistan’s Twenty20 squad for 2013/14. This is officially announced by Pakistan Cricket Board.

ICC World Twenty20 2013/14 (T20I Squad)

  • Mohammad Hafeez
    Mohammad Hafeez (C)
    Age: 33 years , 152 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Off Break Spin
  • Ahmed Shehzad
    Ahmed Shehzad
    Age: 22 years , 112 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Leg Break Spin
  • Bilawal Bhatti
    Bilawal Bhatti
    Age: 22 years , 180 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Fast Medium
  • Junaid Khan
    Junaid Khan
    Age: 24 years , 81 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Left Arm Fast Medium
  • Kamran Akmal
    Kamran Akmal (W/K)
    Age: 32 years , 63 days
    Batting: Right handed
    Bowling:
  • Mohammad Talha
    Mohammad Talha
    Age: 25 years , 152 days
    Batting: Right-hand batsman
    Bowling: Right-arm fast-medium
  • Saeed Ajmal
    Saeed Ajmal
    Age: 36 years , 156 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Off Break Spin
  • Shahid Afridi
    Shahid Afridi
    Age: 34 years , 16 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Leg Break Spin
  • Sharjeel Khan
    Sharjeel Khan
    Age: 24 years , 214 days
    Batting: Left-hand batsman
    Bowling: Leg-break
  • Shoaib Malik
    Shoaib Malik
    Age: 32 years , 44 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Off Break Spin
  • Umar Akmal
    Umar Akmal
    Age: 23 years , 294 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Left Arm Off Break Spin
  • Umar Gul
    Umar Gul
    Age: 29 years , 336 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Medium Fast
  • Zulfiqar Babar
    Zulfiqar Babar
    Age: 35 years , 98 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Left orthodox
  • Sohaib Maqsood
    Sohaib Maqsood
    Age: 26 years , 336 days
    Batting: Right handed
    Bowling: Right Arm Off Break Spin
  • Sohail Tanvir
    Sohail Tanvir
    Age: 29 years , 94 days
    Batting: Left handed
    Bowling: Left Arm Medium Fast

Thursday, January 30, 2014

Ravi Bopara breaks fastest 50s record in T20 against Australia


HOBART: England all-rounder Ravi Bopara has broken the fastest half-century record of his teammate player Paul Collingwood after smashing 7 outclass sixes against Australia in the first Twent20 at Bellerive Oval.
Bopara has become the first English batsman scoring 65 runs in just 23 balls against Kangaroos.
Collingwood had made the fastest half-century in 24 balls against New Zealand on February 7 in 2008.
Bopara has broken sixes record of his teammate player Luke Wright, who had hit 6 sixes against Afghanistan on September 21 in 2012 in Colombo.

Monday, September 17, 2012